شاہ محمود قریشی اورجہانگیر ترین کی لڑائی میں وزیراعظم عمران خان نے کس کی حمایت کر دی؟بڑی خبر آ گئی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)تحریک انصاف کے دو بڑے رہنماوں شاہ محمود قریشی اور جہانگیر ترین کے درمیان اختلافات ایک بار پھر کھل کر سامنے آ گئے ہیں۔شاہ محمود قریشی نے لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا تھا کہ جہانگیر ترین کی پارٹی کیلئے بے انتہا قربانیاں ہیں ، انہوں نے پارٹی کو مشکل حالات سے نکالنے کیلئے ہمیشہ اہم کردار ادا کیا ہے لیکن جب سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف نا اہل ہونے کے بعد پارٹی کا کوئی عہدہ نہیں رکھ سکتے تو جہانگیر خان ترین کو بھی کابینہ اجلاس میں شرکت نہیں کرنی چایئے۔ان کی کابینہ اجلاس میں شرکت سے چیف جسٹس آ ف پاکستان کے فیصلے کی توہین ہوتی ہے اور مسلم لیگ ن کی رہنما مریم اورنگزیب کو پریس کانفرنس کرنے کا موقع بھی ملتا ہے۔

شاہ محمود قریشی کی جانب سے پریس کانفرنس میں تنقید کے بعد جہانگیر ترین نے ٹوئٹ کیا کہ مجھے وزیراعظم عمران خان نے کابینہ اجلاس میں بلایا تھا اور میرا لیڈر عمران خان ہے اور میں صرف اپنے لیڈر کو جواب دہ ہوں۔شاہ محمود قریشی اور جہانگیر ترین کے درمیان 2013ء کے انتخابات کے بعد ہی اختلافات شروع ہو گئے تھے جو کئی مواقع پر کھل کر سامنے آتے رہے ہیں۔کئی مواقع پر عمران خان نے مداخلت کر کے دونوں کے درمیان صلح کرائی تھی۔

تحریک انصاف کے ذرائع کے مطابق شاہ محمود قریشی کے مقابلے میں جہانگیر ترین کو وزیراعظم کا اعتماد حاصل ہے۔یہی وجہ ہے کہ وزیراعظم عمران خان کے قریب ترین سمجھے جانے والے رہنماوں نے کھل کر جہانگیر ترین کی حمایت کی ہے۔تحریک انصاف میں انہی دونوں رہنماوں کی وجہ سے دو الگ اور واضح گروپس ہیں اور ان کے درمیان اختلافات وقتاً فوقتاًسامنے آتے رہتے ہیں۔

Leave comment

Your email address will not be published. Required fields are marked with *.