اسلام آباد(نیوز ڈیسک)شریف اور زرداری خاندان کی جانب سے حکومت سے این آر او لینے کے بدلے تین تین بلین ڈالر دینے کی آفر،وزیر اعظم عمران خان نے این آر او دینے کی سخت مخالفت کر دی،دونوں خاندانوں کے سفارشیوں میں پی ٹی آئی کی اہم شخصیت بھی شامل تھی

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی اور تجزیہ کار ذوالفقار راحت نے نجی ٹی وی چینل پر بات کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ شریف خاندان اور زرداری خاندان کی جانب سے کچھ اہم شخصیات نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی اور دونوں خاندانوں کی جانب سے این آر او ملنے کی صورت میں تین تین بلین ڈالر دینے کی آفر کی گئی لیکن وزیراعظم نے بات سننے سے انکار کر دیا اور کہا کہ ان دونوں خاندانوں کو کسی صورت این آر او نہیں دیا جائے گا۔عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ دونوں خاندان عوام کے سامنے آ کرمعافی مانگیں اور نیب کے قانون کے مطابق لوٹی ہوئی رقم واپس کریں۔

ذوالفقار راحت نے مزید کہا کہ جن شخصیات نے عمران خان سے ملاقات کی اور دونوں خاندانوں کیلئے این آر او مانگا ان میں پی ٹی آئی کی اہم شخصیت بھی تھی جس کا عمران خان بہت احترام کرتے ہیں ۔عمران خان نے اس اہم شخصیت کو بہت پیار سے سمجھایا کہ این آر او کی مجھ سے امید مت رکھیں۔ذوالفقار راحت نے مزید کہا کہ اگلے کچھ دنوں میں آصف زرداری ،بلاول بھٹواور حمزہ شہباز کو منی لانڈرنگ کے کیسز میں گرفتار کر لیا جائے گا ۔ادھر وزیر اعظم عمران خان نے وزیر اطلاعات فواد چوہدری کو ہدایات جاری کیں کہ دونوں خاندانوں کے پہلے کئے گئے این آر اوز کی تفصیلات عوام کے سامنے لائی جائیں ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here