لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)بادامی باغ قبرستان سے نومولود کی نعش نکال کر بھیک مانگنے والا نوجوان گرفتار،علاقے میں خوف وحراس پھیل گیا۔تفصیلات کے مطابق صوبائی دارلحکومت لاہور میں زندہ تو کیا اب مْردوں کا تحفظ خطرے میں پڑھ گیا ۔لاہور پولیس نے ایک ایسے بھکاری الیاس کو گرفتار کیا جو نومولود بچے کی نعش اٹھا کر بھیک مانگ رہا تھا ،ملزم کی شک کی بناء پر تلاشی لی گئی تو کہانی کچھ اور ہی نکلی۔لاہور کے رہائشی شجاع الرحمان جو فیملی کے ہمراہ چند روز قبل فوت ہو جانے والے نومولود بیٹے کی قبر پر پھول ڈالنے اور فاتحہ خوانی کرنے کیلئے بادامی باغ قبرستان پہنچے تو قبر کھودی ہوئی تھی اور بچے کی میت موجود نہ تھی۔شجاع الر حمان نے پولیس کو اطلاع دی اور بچے کی میت کی تلاش شروع کر دی۔

اسی اثناء میں لاہور کے لاری اڈے سے ایک ملزم الیاس کو پولیس نے حراست میں لیا جو نومولود بچے کی نعش اٹھا کر بھیک مانگ رہا تھا۔اطلاع ملنے پر شجاع الر حمان وہاں پہنچے اور اپنے بیٹے کی شناخت کرلی جبکہ پولیس نے والد کی مدعیت میں مقدمہ درج کر کے ملزم الیاس کو گرفتار کرلیا۔ملزم الیاس نے پولیس کو بتایا کہ اس نے بچے کی تدفین کی ریکی کرتے ہوئے موقع ملتے ہی قبر کھود ڈالی اور میت نکال کر بھیک مانگنا شروع کر دی۔ابتدائی تفتیش کے مطابق ملزم الیاس نشے کا عادی ہے اور ایک روز قبل دفنائے گئے نومولود کی نعش کو قبر کھود کر نکالا اور اور اپنا بچہ کہہ کر سڑکوں پر کفن دفن کی بھیک مانگتا رہا۔


ادھرواقعے کی اطلاع ملتے ہی سارے علاقے میں خوف وحراس پھیل گیا جبکہ شہریوں نے انتہائی دکھ اور غصے کا اظہار کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ ملزم الیاس کو میت کی بے حرمتی کرنے پر قرار واقعی سزا دی جائے۔واضح رہے کہ شجاح الرحمان کے ہاں 7سال بعد بیٹا پیدا ہوا تھا جو چند گھنٹے بعد ہی فوت ہو گیا تھا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here