اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)مسلم لیگ ن کے 25ارکان اسمبلی پر مبنی فارورڈ بلاک بن چکا ہے جو جلد ہی منظرعام پر آ جائے گا ان میں ایم این ایز اور ایم پی ایز شامل ہیں۔یہ تمام ارکان اسمبلی شریف خاندان پر بننے والے کرپشن کے مقدمات کی وجہ سے پارٹی سے ناراض ہیں۔تفصیلات کے مطابق حال ہی میں پاکستان پیپلز پارٹی کو خیر آباد کہہ کر پاکستان تحریک انصاف کا حصہ بننے والے شوکت بسرا نے دعویٰ کیا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ ن کے 20سے 25ارکان اسمبلی پر مشتمل فارورڈ بلاک بن چکا ہے جو جلد ہی منظر عام پر آ جائے گا۔فارورڈ بلاک میں قومی اسمبلی اور پنجاب اسمبلی کے ارکان شامل ہیں جن کی رائے ہے کہ شریف خاندان نے ملک کی دولت لوٹی ہے اور پاکستان کو شدید نقصان پہنچایا ہے ۔شریف خاندان پر بننے والے مقدمات کی وجہ سے ہم انہیں کسی صورت سپورٹ نہیں کریں گے۔



شوکت بسرا کا کہنا تھا کہ فارورڈ بلاک میں شامل ارکان جلد منظر عام پر آ جا ئیں گے اور پاکستان کی تعمیر و ترقی میں حصہ لیں گے اور وزیر اعظم عمران خان کے ہاتھ مضبوط کریں گے۔شوکت بسرا کا مزید کہنا تھا کہ فارورڈ بلاک میں شامل پی پی 244بہاولنگر سے ایم پی اے محمد ارشد بھی ہیں جبکہ مزید نام بھی جلد سامنے آ جائیں گے۔واضح رہے کہ چند دن سے مسلم لیگ ن اور مسلم لیگ ق کے اہم رہنماوں کی ملاقاتوں کی افوائیں سرگرم تھیں اور ذرائع کا کہنا تھا کہ پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے فرزند حمز ہ شہباز اور چوہدری پرویز الہیٰ کے فرزند چوہدری مونس الہیٰ کے درمیان ملاقات ہوئی ہے اور یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ دونوں جماعتوں کے درمیان اتحاد کی صورت میں حمزہ شہباز وزیر اعلیٰ پنجاب ہونگے اور مسلم لیگ ق کو پنجاب اسمبلی میں 4 وزارتیں دیں جائیں گی لیکن مسلم لیگ ق کے قائد چوہدری شجاعت حسین نے لندن میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا اتحاد پاکستان تحریک انصاف سے ہے اور انہی کیساتھ رہے گا اورہم کسی صورت مسلم لیگ ن سے اتحاد نہیں کریں گے۔اس بیان کے بعد پنجاب میں حکومت کی تبدیلی کی تمام افوائیں دم توڑ گئیں ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here